پاکستان کےدہشتگردی کےخاتمےمیں ذمہ داری ادانہیں کررہا: وائٹ ہاؤس

Sarah-Sanders

واشنگٹن :  ترجمان وائٹ ہاؤس ساراسینڈرس نے کہا ہے کہ پاکستان کےدہشتگردی کےخاتمےمیں ذمہ داری ادانہیں کررہا ۔

ترجمان وائٹ ہاؤس سارہ سینڈرز نے الزام عائد کیا کہ ہم جانتےہیں پاکستان دہشتگردی کےخاتمےمیں بڑاکردارداکرسکتاہے پاکستان کےدہشتگردی کےخاتمےمیں ذمہ داری ادانہیں کررہا دہشتگردی کےخاتمےکیلیےپاکستان کےمثبت کردارکےخواہشمند ہیں ۔

ان کا مزیدکہنا ہے کہ ایران میں پرتشدد مظاہرےافسوسناک ہیں حکومت کی نااہلی نےمعاملات یہاں تک پہنچادیئے ۔

ساراسینڈرس کا کہنا ہے کہ ایران میں مہنگائی کی وجہ کرپٹ حکومت ہے۔امریکا ایرانی عوام کےساتھ کھڑا ہے ایران میں کسی بھی تبدیلی کی حمایت کریں گےایرانی عوام نےحکومتی اعمال کی بھاری قیمت ادا کی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکی صدرایرانی عوام کےمطالبات کےساتھ کھڑےہیں ٹرمپ نےافغانستان اورجنوبی ایشیاکےلیےنئی حکمت بنائی ہے ۔

سارہ سینڈرز نے کہا کہ پاکستان کے خلاف مخصوص اقدامات کی تفصیلات آئندہ 24 سے 48 گھنٹوں میں سامنے آجائیں گی۔

دوسری جانب اقوام متحدہ میں امریکی سفیر نکی ہیلی نے کہا ہے کہ امریکا پاکستان کی کی255ملین ڈالرزکی امداد روک رہا ہے۔

اقوام متحدہ میں صحافیوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کی امدادکی بندش کاتعلق فلسطین پرقراردادسےنہیں امدادکی بندش کاتعلق دہشتگردوں کوپناہ دینےسےہے۔

نکی ہیلی  کا کہنا تھا کہ صدرٹرمپ پاکستان کی تمام فنڈنگ روکنےکےخواہشمندہیں پاکستان کئی سال سےڈبل گیم کھیلتارہاجوناقابل قبول ہے پاکستان بعض دفعہ امریکاسےتعاون کرتاہے ۔

امریکی مندوب  نے کا کہ پاکستان افغانستان میں دہشتگردوں کوپناہ دیتاہےافغانستان میں موجوددہشتگردامریکی فوج پرحملےکرتےہیں دہشتگردی کیخلاف مہم میں پاکستان سےکہیں زیادہ تعاون چاہتےہیں ۔