اسلام مسلمانوں کےدرمیان بھائی چارےکی تعلیم دیتاہے،خطبہ حج

perform-Hajj

لَبَّیْکَ اللّهُمَّ  لَبَّیْکَ، لَبَّیْکَ لا شَرِیکَ لَکَ لَبَّیْکَ اِنَّ الْحَمدَ وَالنِّعْمَةَ لَکَ وَالْمُلکَ لاشریکَ لَکَ لَبَّیْکَ حج کے رکن اعظم وقوف عرفہ کے دوران مسجد نبوی کے امام شیخ حسن بن عبدالعزیز آل الشیخ نے خطبہ حج دیتے ہوئے کہا کہ اسلام کی حقیقی تصویر اعلیٰ اخلاق اور بہترین سلوک و برتاؤ پر مشتمل ہے۔

یوم عرفہ کےموقع پرخطبہ حج

اللہ پسند کرتےہیں تقویٰ اختیارکرنےوالوں کو،اللہ سےڈرواورکسی کو اس کا شریک نہ ٹھراؤ،اسلام اور دین کی عظمت کی بنیاد توحید ہے ۔

تقویٰ اختیار کروتاکہ تم فلاح پاؤ،اللہ نےآسمان کوتمہارےلیےچھت،زمین کوفرش بنایا،مسلمانوں کوحکم ہےکہ اللہ اوراس کےرسول کی اطاعت کرو

اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے نماز قائم کرو بے شک نماز برائی اور بے حیائی سے روکتی ہے، فرمان باری تعالیٰ ہے اے ایمان والوں تم پر روزے رکھنا فرض کیا گیا جیسے تم سے پہلے امتوں پر کیے گئے تھے۔

اسلام کی حقیقی تصویر اعلیٰ اخلاق اور بہترین سلوک و برتاؤ پر مشتمل ہے، کوئی بھی امت دلوں میں اخلاق کا بیج بوئے بغیر صالح شہری پیدا نہیں کرسکتی۔

اللہ کےاحکامات پرعمل کرناحضورﷺ کی تعلیمات ہیں،تمام انبیاء نےاللہ کی وحدانیت کی دعوت دی،اللہ نےوحدانیت پریقین رکھنےوالوں کیلئےکامیابی کاوعدہ کیا ہے،اللہ سےشریک ٹھہرانےوالوں کاانجام براہوگا۔

قرآن مجید میں اللہ کی توحید کاتذکرہ کثرت سےکیاگیاہے،ہرطرح کی کامیابی اللہ کی وحدانیت میں ہے،حضورﷺکی رسالت کی گواہی میں بھی کامیابی ہے،قرآن میں ہےحضورﷺ کوتمام انسانیت کےلیےبھیجاہے ۔

قرآن میں ہےرسولﷺکوبشیر،نذیراورسراج منیربنایاگیاہے،اللہ کی وحدانیت کی گواہی فرشتوں،رسولوں،کتابوں پرایمان اسلام کےارکان ہیں۔

نمازقائم کرنےکاحکم دیاگیا،نمازہرطرح کی برائی سےدورکرتی ہے،قرآن مجیدمیں بھی نمازقائم کرنےکاحکم دیاگیاہے،اللہ کاوعدہ ہےکہ تمہاری نیکیوں کوضائع نہیں کیاجائےگا،اللہ نےنمازقائم کرنےکےساتھ زکوٰۃ دینےکاحکم دیاہے۔

اللہ کاوعدہ ہےتم اللہ کےراستے پرخرچ کرنےصلہ ضرورپاؤگے،اللہ کاحکم ہےکہ ہم نےتمہارےاوپرروزےفرض کئےہیں،اللہ نےصاحب استطاعت پرحج کوفرض کیاہے،حضورﷺ نےفرمایاحج کرنیوالانومولودکی طرح گناہوں سےپاک ہوجاتاہے،اللہ کاحکم ہےکہ تم مجھ سےمحبت کرتےہوتورسولﷺ کی اطاعت کرو ۔اللہ کاحکم کےرسولﷺ کااسوہ حسنہ مسلمانوں کیلئےمشعل راہ ہے،اللہ نےرسولﷺ کواخلاق کےاعلیٰ مرتبےپرقائم کیاہے ۔

اخلاق حسنہ معاشرےکوکامیابی کی طرف لےجاتاہے،اسلام آپس میں اچھےطریقےسےہم کلام ہونےکی تعلیم دیتاہے ۔

حضورﷺنےآخری خطبہ میں بہت بڑاپیغام دیا،پیغام میں کہامسلمان کامال،خون اورعزت دوسرےمسلمان پرحرام ہے،مسلمان کےمال،خون اورعزت کی حفاظت کرنی چاہیے،رسولﷺ کی تعلیمات اخلاق حسنہ سےبھری ہوئی ہیں۔

اسلامی معاشرہ لوگوں کوباہمی محبت کادرس دیتاہے،اسلام ظلم اورزیادتی سےشدت کےساتھ منع کرتاہے،معاشرےکےامن کےلیےہرمسلمان کوکوشش کرنی چاہیے،مسلمان کوچاہیےزیادتی نہ کرے،اللہ زیادتی کوپسندنہیں کرتا۔

اللہ کاحکم ہےکہ اپناوعدہ پوراکیاجائے،اللہ نےپڑوسیوں،رشتہ داروں کےساتھ اچھےبرتاؤکاحکم دیاہے،اللہ تعالیٰ غروروتکبرکرنےوالوں کوپسندنہیں کرتا۔

اللہ تعالیٰ نےوالدین کےساتھ اچھےسلوک کاحکم دیاہے،اسلام ہمیں برائی،فحاشی وغیرہ سےمنع کرتاہے،اسلام میاں،بیوی کےدرمیان اچھےتعلق کی تعلیم دیتاہے ۔

اسلام فیصلہ سازی عدل کی بنیادپرکرنےکاحکم دیتاہے،مسلمان امانتدارہوتےہیں اوروعدہ پوراکرتےہیں،زکوٰۃ،صدقات اورخیرات کرنےوالوں کواللہ پسندکرتاہے،پسندیدہ چیزاللہ کےراستےمیں قربان کرنےتک نیکی کابلندرتبہ نہیں مل سکتا ۔

غصہ ترک کرنے،بھلائی کامعاملہ کرنیوالوں کواللہ پسندکرتاہے،اللہ تعالیٰ توبہ کرنےوالوں کوبہت پسندکرتاہے،توبہ اورعمل صالح کرنیوالوں کیلئےبھلائیاں ہی بھلائیاں ہیں ۔

آج کےدن بڑی تعدادمیں لوگوں کی توبہ قبول ہوتی ہے،آج کےدن ہی اللہ نےحضورﷺکودین کےمکمل ہونےکی خوشخبری دی اسلام مسلمانوں کےدرمیان بھائی چارےکی تعلیم دیتاہے،ہماری کامیابی قرآن اورسنت پرچلنےمیں ہے ۔

اسلامی تعلیمات سےمعاشرتی واقتصادی معاملات بہترہونگے،اسلام نےزیادتی،جوئے،سٹےبازی کوحرام قراردیاہے،حکمرانی ایسی ہونی چاہیےکہ اللہ کےاحکامات،رسولﷺ کی تعلیمات پرعمل ہواسلام مسلمانوں کوامرباالمعروف ونہی عن المنکرکی تعلیم دیتاہے،مسلمانوں کےحکمران،علماء،تربیت کرنیوالےاچھےاخلاق کی تعلیم دیں۔

عازمین  کی عرفات سے مزدلفہ روانگی 

میدان عرفات میں 20 لاکھ کے  قریب عازمین موجود ہیں  جن میں سے 84 ہزار پاکستانی ہیں ،عازمین خطبہ حج سننے کے بعد  امام حج کی اقتدار میں نماز ظہر اور عصرقصر کے ساتھ ادا کریں گے۔عازمین غروب آفتاب کے بعد مزدلفہ پہنچیں گے جہاں وہ نمازِ مغرب اور عشاء ایک ساتھ پڑھیں گے ۔  رات بھر مزدلفہ میں کھلے میدان اور پہاڑوں پر قیام ہوگا اور رمی جمرات کے لیے کنکریاں چنیں گے ۔اور نماز فجر بھی مزدلفہ میں ہی ادا کریں گے۔

دس ذی الحج کو طلوع آفتاب کے بعد حجاج کرام مزدلفہ سے منیٰ کی جانب جائیں گے ۔ جہاں سب سے بڑے شیطان کو کنکریاں ماری جائیں گی۔ اور رمی جمرات کے بعد حجاج کرام قربانی کریں۔ قربانی کرنے کے بعد سر منڈوا کر احرام کھول دیں گے  اور طواف زیارت کریں گے۔

پاکستان کی سرکاری اسکیم کے تحت ایک لاکھ 7 ہزار 351 عازمین حج مکہ مکرمہ پہنچے اور نجی اسکیم کے تحت 76 ہزار 619 عازمینِ حج سعودی عرب پہنچے ہیں جبکہ مقامی اور پاکستان سے آئے ہوئے معاونین کی تعداد 2 ہزار 840 ہے۔

اس سال حج کے موقع پر حجاج کرام کیلئے جدید ایپس متعارف کرائی گئی ہیں جن سے انہیں مقدس مقامات کے بارے میں معلومات حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔