سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سرکاری دورے پر امریکا روانہ

Mohammed-bin-Salman

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان آج دارالحکومت الریاض سے امریکا کے سرکاری تین دورے پر روانہ ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق شہزادہ محمد بن سلمان امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور دوسرے اعلیٰ عہدے داروں سے ملاقات کریں گے اور ان سے دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعلقات کے فروغ ، مشرق وسطیٰ کے خطے کی تازہ صورت حال اور باہمی دلچسپی کے دوسرے امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔

دونوں رہنما ایران کے جارحانہ عزائم سے نمٹنے کے لیے مشترکہ حکمت عملی پر تبادلہ خیال کریں گے۔اس کے علاوہ وہ امریکی قیادت سے ایران اور چھے عالمی طاقتوں کے درمیان جولائی 2015ء میں طے شدہ جوہری معاہدے میں ترمیم ،یمن میں حکومت کے خلاف باغیانہ جنگ لڑنے والی حوثی ملیشیا کو مذاکرات کی میز پر لانے کے لیے دباؤ ڈالنے ،شام میں جاری بحران کے ممکنہ حل ،اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان امن عمل کی بحالی ، دہشت گردی اور اس کے لیے مالی معاونت کرنے والوں سے نمٹنے کے حوالے سے بھی بات چیت کریں گے۔

شہزادہ محمد بن سلمان واشنگٹن کے علاوہ ، نیو یارک، لاس انجیلس اور سان فرانسسکو بھی جائیں گے جہاں وہ مالیات، آئل اور ٹیکنالوجی کے بڑے ادارے کے سربراہوں سے بھی ملاقات کریں گے ،ان میں ایپل اور گوگل طیار ساز کمپنی لاک ہیڈ مارٹن بھی شامل ہیں ۔دورے کے دوران شہزادہ محمد بن سلمان نیویارک میں اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹریس سے بھی ملاقات کریں گے ۔