سیاسی کارکنوں کو گدھا کہنے والا اپنا تعارف بھی کروا رہا ہے، فضل الرحمان

راولپنڈی: جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ سیاسی کارکنوں کو گدھا کہنے والا اپنا تعارف بھی کروا رہا ہے۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کے جاری کردہ بیان کے مطابق کہنا تھا کہ پورے ملک میں عام انتخابات کے موقع پر مہم جاری ہے اور قوم نے پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ کرنا ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ قوم نے الیکشن میں نئی قیادت کا انتخاب کرنا ہے اور کسی زمانے میں اقتدار حاصل کرنے کے لیے تلوار چلتی تھی۔ آج تلوار کی جگہ ووٹ نے لے لی ہے اور یہ ووٹ نہیں تلوار ہے، اسے حق کے لیے استمعال کریں۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا سیاسی، معاشی نظام مذہب بیزار طبقوں کے ہاتھ میں رہا ہے اور 350 ڈیمز بنانے کے دعویداروں نے ایک ڈیم نہیں بنایا ہے۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ عمران خان اپنے صوبے میں ایک اسپتال تک نہیں بنا سکے ہیں اور خیبر پختونخوا میں اسپتالوں اور تعلیم کے نظام کو برباد کردیا گیا ہے۔ پاکستان ایک زرعی ملک ہے اور بھارت کی آدھی جارحیت ہمارے پانی کے مستقبل کو برباد کر رہی ہے۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ نگراں حکومت نے ملک پر قرضے کا بوجھ مزید بڑھا دیا ہے اور ایک لیڈر کہتا ہے کل جو لوگ نکلے ہیں وہ گدھے ہیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ سیاسی کارکنوں کو حق ہے کہ وہ اپنی قیادت کے لیے باہر نکلیں اور سیاسی کارکنوں کو گدھا کہنے والا اپنا تعارف بھی کروا رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی اسلامی شناخت کو بحال کریں گے۔