ڈاکٹر روتھ فاؤکی یاد میں 50 روپےکا یادگاری سکہ جاری

کراچی: اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے جذام کے لیے کام کرنے والی ڈاکٹر روتھ فاؤ کی یاد میں 50 روپے کا یادگاری سکہ جاری کر دیا۔

مرکزی بینک کے گورنر طارق باجوہ اور پاکستان میں متعین جرمن سفیرمارٹن کوبلر نےڈاکٹرروتھ فاؤکی شاندارخدمات کےاعتراف میں 50 روپے کے یادگاری سکے کی تقریب رونمائی اسٹیٹ بینک آفس کراچی میں ہوئی جس میں گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ اور جرمن سفیر مارٹن کوبلر نےشرکت کی۔

اسٹیٹ بینک نے یادگاری سکہ وفاقی حکومت کی منظوری سے جاری کیا ہے، سکہ بینکنگ سروسز کارپوریشن کے تمام دفاتر سےعوام کو دستیاب ہوگا۔

اس موقع پر گورنراسٹیٹ بینک کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر رتھ فاؤ پاکستان میں خلوص، وابستگی اور خدمت کی علامت تھیں۔ ان کی انتھک کوششوں کے نتیجے میں پاکستان میں جذام کے مرض پرقابو پایا گیا اور پاکستان ایشیا میں یہ حیثیت رکھنے والا پہلا ملک بن گیا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کےعوام اور ریاست نے معاشرے کے لیے ڈاکٹر فاؤ کی خدمات کا بھرپوراعتراف ان کی زندگی میں ہی کیا۔ انہیں ہلالِ امتیاز، نشانِ قائداعظم اور ہلالِ پاکستان کے اعزازات سےبھی نوازا گیا۔

گورنراسٹیٹ بینک نےمزید کہا کہ یادگاری سکےکا اجرا ایک منفرد اقدام ہے جو ماضی میں صرف قائد اعظم، علامہ محمد اقبال، فاطمہ جناح اور عبدالستار ایدھی جیسےعظیم لوگوں کےاعزازمیں کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ جرمن ڈاکٹر رتھ فاؤ پاکستان میں جذام کے مرض سے لڑنے اور اس سے متاثرہ لوگوں کے لیے وقف کرنے والی عظیم ہستی 10 اگست کو انتقال کرگئی جنکی 19 اگست کو سرکاری اعزاز کیساتھ کراچی کے گورا قبرستان میں تدفین کی گئی۔ جس میں صدر پاکستان، وزیر اعظم، تینوں مسلح افواج کے سربراہان، گورنر سندھ، وزیر اعلیٰ سندھ سمیت دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی تھی۔