وزیراعلیٰ سندھ کے زیرصدارت صوبائی کابینہ کا اجلاس

کراچی : سندھ کابینہ کے اجلاس نے دیا میر بھاشا اور ،مہمند ڈیمز کے لیےعطیات کو سلیز ٹیکس سے استثنیٰ کی منظوری دے دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیرصدارت سی ایم ہاؤس میں صوبائی کابینہ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں دیا میر بھاشا اور ،مہمند ڈیمز کے لیےعطیات کو سلیز ٹیکس سے استثنیٰ کی منظوری دے دی گئی ہے۔

جبکہ اجلاس میں ادویات کی خریداری سے متعلق استثنیٰ پر بحث بھی کی گئی۔ اجلاس میں کابینہ نے طارق احسن کو ایک سال کے لیے سندھ بینک چیف ایگزیکٹو افسر مقرر کرنے کی بھی منظوری دی ہے۔

سندھ کابینہ اجلاس میں پلاسٹک کی تھیلیوں پر پابندی عائد کرنے پر بحث کی گئی ،اس کے علاوہ اجلاس کے دوران حبکوکی جانب سے سندھ حکومت کو300ملین گیلن کاڈی سیلینیشن پلانٹ لگانےکی پیشکش کی گئی۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ پانی کی قلت ہے،کراچی کو2ذرائع سےپانی مل رہاہے،کینجھرجھیل سے583ملین گیلن اورحب ڈیم100ملین گیلن پانی مل رہاہے،چاہتاہوں شہرکےلوگوں کوسمندرکےپانی کومیٹھابناکرمہیاکیاجائے،صنعتی علاقوں کےفضلہ پانی کوکارآمد بناکرمیسرکیاجائے۔

مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ صنعتی علاقوں میں پانی کی طلب200 میلن گیلن ہے،شہرقائدکوروزانہ کی بنیادپر1100ملین گیلن پانی  کی ضرورت ہے،چاہتےہیں شہرکےلیے300ملین گیلن کاڈی سیلینیشن پلانٹ لگائیں۔

حبکو حکام کا کہنا تھا کہ ڈی سیلینیشن پلانٹ حب کےپاس لگایاجائے،حب سےکراچی کوپانی پہنچانےکےلیےواٹر چینل  بناہواہے۔ سالڈویسٹ مینجمنٹ روزانہ3ہزار ٹن کچرافراہم کرےتوپلانٹ لگاسکتےہیں

اس موقع پر سعید غنی ،شہلارضا، مرتضیٰ وہاب،چیئرمین پی اینڈڈی،سیکریٹری خزانہ ودیگرشریک تھے۔

دوسری جانب سندھ کابینہ نے گداگری روکنے کے لیے 3 رکنی کمیٹی بنادی جو کہ 3 ماہ میں پیش کریں گی۔