طلال چوہدری کا سزا کے خلاف اپیل کرنے کا اعلان

اسلام آباد : مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کا کہنا ہے کہ اس کیس کےخلاف اپیل دائرکروں گا، ہم اپیل میں ثابت کریں گےکہ توہین عدالت نہیں کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ج توہین عدالت کیس کا فیصلہ کیا گیا،یہ کیس پچھلےکئی ماہ سے عدالت میں زیرسماعت تھا، انتخابات کےدوران بھی کیس کی کئی پیشیاں ہوئیں،اس کیس سےمیرے حلقہ کےلوگوں کو مشکلات ہوئیں،انتخابات میں کیس کا فائدہ مخالفین نے اٹھایا۔

طلال چوہدری نے کہا کہا س طرح کافیصلہ حکومت سازی کومتاثرکرےگا،جس کا فائدہ صرف مخالفین کوہوگا،ہم جمہوریت پسند،آئین کےپاسدارہیں،صرف حکمرانی کےلیےنااہل ہیں،ایساطریقہ کاراپناناچاہیےکہ اداروں کی عزت میں اضافہ ہو،یہ فیصلہ جمہوریت اورمجبورآزادمیڈیاکےنام ہے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما کا کہنا تھا کہ اس کیس کےخلاف اپیل دائرکروں گا،عمران خان توہین عدالت کیس میں درگزرسےکام لیاگیا،عمران خان نےمجھ سےزیادہ نازیبازبان استعمال کی تھی۔

انکا کہناتھا کہ میں اہل ہوں نااہل آئین وجمہوریت اورپاکستان کاوفادارہوں،میراکیس مضبوط ہےاس لیےاپیل میں لےکرجارہاہوں،پی سی اوججزسےمتعلق بات کرنےسےتوہین عدالت نہیں ہوتی،ہم اپیل میں ثابت کریں گےکہ توہین عدالت نہیں کی گئی۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری کو آرٹیکل 204 کے تحٹ توہین عدالت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے عدالت برخاست ہونے تک قید کی سزا سنائی ، جس کے بعد وہ اگلے 5 سال کے لیے کسی بھی عوامی عہدے کے لیے نااہل ہوگئے۔طلال چوہدری پر 1 لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔