بال ٹیمپرنگ: اسٹیو اسمتھ کی وطن واپسی پر آبدیدہ پریس کانفرنس

 سڈنی: بال ٹمپرنگ اسکینڈل میں ایک سال کے لیے معطل ہونے والے آسٹریلوی کپتان اسٹیو اسمتھ وطن واپسی پہنچنے کے بعد پریس کانفرنس میں آبدیدہ ہوگئے۔

سڈنی انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر پریس کانفرنس کے دوران آسٹریلوی کپتان اسٹیو اسمتھ جذباتی ہوگئے اور اس دوران ان کے عقب میں کھڑے ان کے والد نے ان کے کاندھے پر ہاتھ کر انہیں سہارا دینے کی کوشش کرتے رہے۔

اسٹیو اسمتھ نے تمام معاملے کے ذمہ داری قبول کرتے ہوئے معافی مانگی اور کہا کہ میں کرکٹ سے بہت محبت کرتا ہو۔ مجھے کرکٹ جیسے عظیم گیم کو کھیلنا بہت اچھا لگتا ہے اور چاہتا ہوں کہ نوجوان نسل کرکٹ کے عظیم کھیل سے محبت کرے۔ اسٹیو اسمتھ کا کہنا تھا کہ میں معافی چاہتا ہوں اوراس تکلیف پر معافی مانگتا ہوں جو میری وجہ سے آسٹریلیا اور عوام کو پہنچی ہے۔

بال ٹیمپرنگ واقعہ کے معاملے پر آسٹریلوی ہیڈ کوچ ڈیرن لیہمن مستعفی کا کہنا ہے کہ مین نے عہدے سے دستبردار ہونے کا اعلان کردیا ہے اور ان کا کہنا تھا کہ جنوبی افریقہ کے خلاف جاری سیریز بطور کوچ آخری میچ ہوگا۔

واضح رہے کہ جنوبی افریقا کے خلاف کیپ ٹاؤن میں ٹیسٹ میچ میں آسٹریلوی کھلاڑی بینکرافٹ کو واضح طور پر بال ٹیمپرنگ کرتے ہوئے دیکھا گیا تھا جس کے بعد کینگروز کی قیادت کرنے واے اسٹیون اسمتھ نے جرم کا اعتراف بھی کر لیا تھا۔ غلطی کا اعتراف کرتے ہوئے آسٹریلوی کرکٹ ٹیم کے کپتان اسٹیون کا کہنا تھا کہ بال ٹمپرنگ کا ٹیم کی قیادت نے سوچ سمجھ کر فیصلہ کیا تھا تاکہ میچ میں کامیابی حاصل کی جاسکے۔

یاد رہے کہ ایک سال کی پابندی کے دوران کھلاڑی کسی قسم کی کرکٹ کی سرگرمیوں میں حصہ نہیں لے سکیں گے جب کہ اسٹیو اسمتھ اور ڈیوڈ وارنر 2 سال تک ٹیم کی قیادت سے محروم رہیں گے۔ آسٹریلوی میڈیا کے مطابق آسٹریلوی کرکٹ بورڈ نے بال ٹمپرنگ کیس میں اسٹیو اسمتھ اور ڈیوڈ وارنر پر ایک ایک سال کی پابندی عائد کی ہے۔