ورلڈ ایموجیز ڈے: پیغام میں جذبات کے اظہار کا آسان ذریعہ

کسی زبان کا مقصد بات چیت کرنا اور خیالات کا اظہار کرنا۔ واٹس ایپ، فیس بک میسنجر اور دیگر ایپس کے ذریعے چیٹنگ کرنا اب روز مرہ کی بات ہوگئی ہے۔ ان ایپس کو استعمال کرتے ہوئے ہم اکثر ایموجیز کا بھی استعمال کرتے ہیں ۔

ایموجیز کے ذریعے ہم اپنی بات میں بہتر طریقے سے جذبات کا اظہار کرسکتے ہیں۔ پہلے اپنی بات سمجھانے کے لیے پوری کہانی لکھ دیے جاتے تھے معمولی سا غصہ ہو یا محبت کا اظہار اب صرف ایک ایموجی ہی کافی ہوتا ہے۔

بعض ایموجی کے استعمال سے ہم لوگوں کا موڈ تبدیل بھی کرسکتے ہیں۔ ایموجی سے ہم کسی کو خوش بھی کرسکتے ہیں۔

Related image

سب سے پہلا ورلڈ ایموجی ڈے 2014 میں 17 جولائی کو منایا گیا۔ اس مخصوص دن کو چننے کی وجہ یہ تھی کہ ایموجی میں اگر کلینڈر کو استعمال کیا جائے تو اس میں 17 جولائی کی تاریخ درج ہوتی ہے۔

تاہم پہلی مرتبہ ایموجیز کا استعمال 1990 میں کیا گیا، جبکہ پہلی مرتبہ 2011 میں اسے موبائل فون میں ایپل کمپنی نے استعمال کیا۔

ڈیجیٹل کی بورڈ کی ایپ بنانے والی کمپنی سوفٹ کی نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ سال 2016 میں برطانیہ میں ’’ہنس ہنس کر رونے والی شکل‘‘ کا ایموجی سب سے زیادہ استعمال ہوا۔

Related image

جبکہ دوسرے نمبر پر ’’بوسہ‘‘ دینے والی ایموجی اور تیسرے نمبر پر ’’لال رنگ والے دل‘‘ کا ایموجی تھا۔

Image result for emoticons